فیس وصول کرنےکےلئے بچوں کا استعمال برداشت نہیں : کیجریوال

نئی دہلی، 12 جولائی (یو این آئی) وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا ہے پرانی دہلی کے بلی ماران میں واقع اسکول میں فیس ادا نہ کرنے والے بچوں کو شدید گرمی میں تہہ خانہ میں رکھنےپر قصورواروں کےخلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

نائب وزیر اعلی اور وزیر تعلیم منیش سسودیا کےساتھ جمعرات کو اسکول کا معائنہ کر نےکےبعد مسٹر کیجریوال نے میڈیا سے بات چیت میں کہاکہ جن بچوں کو تہہ خانے میں رکھا گیا تھا، میں نے ان تمام بچوں اور ان کے والدین سے بات کی ہے مستقبل میں ایسا کوئی واقعہ نہ ہو اس کے لئے اسکول کی پرنسپل کو سخت ہدایت دی گئی ہے۔
مسٹر کیجریوال نے کہا کہ اس معاملے میں ایف آئی آر درج کرکے تحقیقات شروع کی جا چکی ہے۔ حکومت بھی اس معاملے کی جانچ كروائےگي اور جو بھی مجرم ہوگا اسے بخشا نہیں جائے گا۔ وزیر اعلی نے کہا کہ دہلی حکومت اور دہلی پولیس دونوں ہی اس معاملے میں سخت کارروائی کرے گی اور مستقبل میں ایسے واقعے کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔

وزیر اعلی نے پرنسپل کو سخت ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ فیس لینے کے لئے بچوں کا استعمال بالکل غلط ہے۔ پولیس کے علاوہ حکومت بھی جانچ کروا رہی ہے۔ تعلیم دہلی
حکومت کی ترجیح ہے اور مستقبل میں ایسی غلطی نہیں ہونی چاہئے۔ اس موقع پر دہلی حکومت کے وزیر عمران حسین بھی موجود تھے۔

غور طلب ہے کہ اسکول کی فیس ادانہ کرنے والے بہت سے بچوں کو پیر کو گرمی میں اسکول کے تہہ خانہ میں مبینہ طور پر کئی گھنٹوں تک رکھا گیا۔