مالیا معاملے میں مودی جیٹلی کی خاموشی شبہ پیدا کرتی ہے : کانگریس

نئی دہلی،  (یو این آئی) کانگریس نے کہا ہے کہ بینکوں کے نو ہزار کروڑ روپے لے کر فرار شراب کاروباری وجے مالیا کے بارے میں گزشتہ 48 گھنٹے میں جو حقائق سامنے آئے ہیں، ان پر وزیر اعظم نریندر مودی اور وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی خاموشی سے ظاہر ہوتا ہے کہ اس نے اس اقتصادی مجرم کو بھگانے میں ان کا کرداررہا ہے۔
کانگریس کے مواصلات محکمہ کے سربراہ رنديپ سنگھ سرجےوالا نے یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں منعقدہ پریس کانفرنس میں کہا کہ مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) اورانفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ (ای ڈی) جس طرح مالیا کو بچانے میں لگے رہے وہ تشویش کا موضوع ہے اور وزیر اعظم اور وزیر خزانہ کو اس کے بارے میں جواب دینا چاہئے۔ مالیا فرارکیسے ہوئے اس ضمن میں جو انکشاف ہو رہے ہیں ان پر مسٹر مودی اور مسٹر جیٹلی کی جانب سے کوئی جواب نہیں آ رہا ہے اور یہ شک پیدا کرتا ہے کہ مالیا کو بھگانے میں ان کا ہاتھ رہا ہے۔
انہوں نے کہا کہ مسٹر جیٹلی پارلیمنٹ ہاؤس کے کوریڈور میں وجے مالیا سے ملاقات کی بات کر رہے ہیں لیکن کانگریس لیڈر پی ایل پنیا دعوی کر رہے ہیں کہ انہوں نے مسٹر جیٹلی اور مالیا کو پارلیمنٹ کے مرکزی ہال میں بیٹھ کر لمبی بات چیت کرتے ہوئے دیکھا ہے۔ ملک کے ممتاز انتظامی افسر رہنے والے مسٹر پنیا معزز سیاستدان ہیں اور وہ کہہ رہے ہیں کہ لندن جانے سے پہلے مالیا نے مسٹر جیٹلی سے لمبی بات کی ہے۔ ان کا چیلنج ہے کہ

سی سی ٹی وی کیمرے کی ریکارڈنگ کو دیکھی جائے اور اگر وہ غلط ثابت ہوا تو وہ سیاست چھوڑ دیں گے۔