محبت میں صلے کی آرزو واللّہ کمال کرتے ھو

Zaib Nisa
=============
محبت میں صلے کی آرزو واللّہ کمال کرتے ھو

خزانہء عشق پہ بیٹھے ھو اور سوال کرتے ھو….

مجھے ایسا نہیں بننا کہ میرا وجود کسی کی آنکھ میں نمی لاۓ , میری باتیں کسی کے لیۓ ازیت بنے ..مجھے یہ چاہ بھی نہیں کہ ہمہ وقت میں لوگوں کے لبوں پر واہ واہ کی طرح سجی رہوں. نہ آہ بننا نہ واہ بننا. کیونکہ کسی کی آہ سے میری دنیا آخرت برباد ہوسکتی ہے اور واہ کا نشہ تکبر میں ڈبو سکتا ہے مجھے* . مجھے اپنی ذات کے گرد بس چند مخلص لوگوں کے ساتھ زندگی گزار کے اس ابدی سفر کی جانب روانہ ہونا ہے جہاں پر عاشق کی محبوب سے ملاقات ہوتی ہے اس اصل عشق کی جانب جو بس رب کی ذات ہے۔۔!!!

محبت اور عزت کے لئے بیشک جھک جائیں………

مگر محبت اور عزت کسی سے جھک کر نہ مانگیں….

Mohbbat mein sile ki aarzu wallah kamal krte ho…
Khazana ishq pe bethe ho or sawal krte ho…………
Mujhe aisa nahi banna ke mera wujud kisi ki aankh mein nami lae..
Meri baten kisi ke liyen aziyat banen..
Mujhe ye chah bhi nahi ke hama waqt main logo ke labon pr wah wah ki tarha saji rahun…
Na aah banna na waah banna..
Kiyunke kisi ki aah se meri duniya akhrat barbad ho sakti hai.or wah ka nasha takabbur mein dubo skta hai..
Mujhe apni zaat ke gird bs chand mukhlis logon ke sath zindagi guzar ke is abdii safar ki janib rawana hona hai jahan pr aashiq ki mehboob se mulaqat hoi hai.
Us asal ishq ki janib jo bs Rabb ki zaat hai..
Mohbbat or izzat ke liyen beshak jhuk jaen…
Magar..
Mohbbat or izzat kisi se jhuk kr na mangen…..