مرد بھی عورت کی طرح خدا کی ایک خوبصورت تخلیق ہے

Zaib Nisa
=============
مرد بھی عورت کی طرح خدا کی ایک خوبصورت تخلیق ہے۔ میں نے اگر مرد کو لڑکیوں پہ فقرے کستے دیکھا ہے تو اس آدم آزاد کو اولاد ، گھر والوں کے لیے دوسروں کی گالیاں سنتے بھی دیکھا ہے۔
میں نے اگر مرد کو ہوس کا پجاری دیکھا ہے تو اس مرد کو بہنوں کے جہیز کے لیے پائی پائی جوڑتے اور اپنی عمر گزارتے بھی دیکھا ہے۔
میں نے اگر مرد کو انا پرست دیکھا ہے تو اسی مرد کو بس میں اپنی سیٹ عورت کے لیے چھوڑتے ، عورتوں کو قطار میں کھڑے رہنے کی زحمت سے بچاتے بھی دیکھا ہے۔
میں نے اگر مرد کو بے حس اور بے نیاز دیکھا ہے تو اسی مرد کو پردیس میں دھکے کھاتے بھی دیکھا ہے۔
میں نے اگر مرد کو عورت کو پاوں کی جوتی سمجھتے دیکھا ہے تو وہیں مرد کو بنت حوا کو سر کا تاج ، ہاتھ کا چھالہ بنا کے رکھتے بھی دیکھا ہے۔
ہر تصویر کے دو پہلو اور ہر سکے کے دو رخ لازمی ہوتے ہیں۔ اگر وجودِ زن سے تصویر کائنات میں رنگ تو یہ تصویر مکمل مرد کے وجود سے ہی ہوتی ہے۔

Mard bhi aurat ki tarah khuda ki aik khubsurat takhleeq hai. Maine agar mard ko ladkiyon pr fuqre kaste dekha hai to is aadam zaad ko aulad or ghar walon ke liyen dusron ki gaaliyn sunte bhi dekha hai…
Maine agar mard ko hiwas ka pujari dekha hai to usi mard ko behno or betiyon ke jahez ke liyen paayi paayi jodte or apni umr guzarte hue bhi dekha hai..
Maine agar mard ko ana parast dekha hai to usi mard ko bus mein apni seat aurat ke liyen chorhte us ko qatar mein khade rehne ki zehmat se bachate bhi dekha hai..
Maine agar mard ko be hiss or be niyaz dekha hai to isi mard ko pardes mein dhakke khate bhi dekha hai..
Maine agar mard ko aurat ko paun ki juti samajhte dekha hai to wahin mard ko bint e hawwa ko sr ka taaj hath ka chala bana ke rakhte bhi dekha hai…
Hr tasawwur ke do pehlu or hr sikke ke do rukh lazmi hote hain ..
Agar wujud e zan se tasweer e kainaat mein rang hai to yeh tasweer mukammal mard ke wujud se hi hoti hai…..