م· نفعت بخش بزنس پولٹری فارم ۔۔۔۔۔

Zaara Mazhar – chashma Pakistan
===========

80ء کی دہائی میں ابا نے گوجرانوالہ کے مضافات میں 13 کنال رقبے پر پولٹری فارم سٹارٹ کیا ۔۔۔ شہر کا سب سے جدید اور بڑا پولٹری فارم تھا ۔۔۔ امریکہ سے جدید طرزِ مرغ بانی کے بروشرز منگوائے گئے اور سسٹم اپلائی کیا گیا ۔ تب پی آ ئی اے کے طیارے کراچی سے مال لاہور ڈیلیور کرتے تھے اور وہاں سے گاڑیوں میں مال ارد گرد کے شہروں میں سپلائی کیا جاتا ۔۔ کچھ عرصہ تک فارم میں انکیوبیٹرز بھی آ گئے ۔۔۔۔ فارم پر انڈوں سے چوزے نکلوانے کا کام بھی شروع ہوا شیور ، لیئرز اور برائلرز کے نام سے ۔ تب گوجرانوالہ کی سادہ لوح عوام کو اس ولائیتی مال سے زیادہ شناسائی نہیں تھی ۔ سو وہ انہیں حرام کا مال کہتے تھے اور کچھ مولانا حضرات تو اسے حرام اور ناجائز قرار دے چکے تھے ۔۔۔۔۔
۔۔۔ جن کمپنیوں سے چوزے منگوائے جاتے ان کے ڈاکٹرز باقاعدگی سے سے وزٹ کرتے ۔۔۔ اور رانی کھیت ٹائپ کی بیماریوں سے بچاؤ کے حفاظتی ٹیکے لگاتے پندرہ بیس دن بعد انکی تیز چونچیں جلا کر رگڑی جاتیں ۔۔ خیر لمبی کہانی ہے پولٹری فارم چل کے نہیں دیا۔۔۔ شائد جدید سسٹم گوجرانوالہ کے لوکل دیہاتی عملے کی سمجھ سے باہر تھا ۔۔۔ چار سال کے مسلسل خسارے کے بعد پولٹری فارم بری طرح فلاپ ہونے کے بعد شٹ ڈاؤن ہوگیا ۔۔۔
میں پرسوں لمبے سفر کی تیاری میں مصروف تھی ٹی وی نہیں دیکھا وزیراعظم کا خطاب نہیں سنا ۔۔۔۔ کل سفر میں تھی گاہے بگاہے دوستوں کی وال وزٹ کی ۔۔ ہر طرف چوں چوں چاں چاں ۔۔۔ کٹ کٹ ۔۔ اور پھر کٹاک کی آ وازیں آ رہی تھیں ۔۔ کچھ سمجھ نہیں آ یا سب کو کیا ہوگیا ہے ۔۔۔۔سادہ لوحی سے ایک دوست سے پوچھا کیا معاملہ ہے انہوں نے جھٹ مشورہ دے ڈالا مرغیاں پال لیجئے ۔۔ انہیں ہماری دکھتی رگ معلوم نہیں تھی ہم ابا کا ڈوبا بزنس تیرانے میں کتنے ذیادہ انٹرسٹڈ ہیں ۔۔ سو ہم نے طویل سفر میں پولٹری فارم کی بنیاد رکھ لی ۔۔۔ را میٹیریل ( ننھے چوزے ) منگوا لیئے دانے پانی کا بندوبست ہوگیا ۔۔ جو خامیاں ابا کے بزنس کو ڈبونے کا بندوبست بنی تھیں ہم نے ان کی بھی صفائی کرڈالی ۔۔۔ trained man power کا بندوبست کر نے میں لگے تھے ۔۔۔۔۔ مگر پھر فیس بک کھولی تو اندازہ ہوا پوری قوم ہی وزیراعظم کے مشورے پر عمل کرتے ہوئے انڈے بچے لے آئی ہے ۔ ہر وال پہ کٹ کٹ ہو رہی ہے مگر ہمارے پاس تو وراثتی تجربہ بھی ہے ہم شاید زیادہ حقدار ہیں ۔ مشورہ دیجئے ہم کیا کریں ۔۔۔۔ بزنس کریں جس کی خیالی داغ بیل کل دورانِ سفر ڈال چکے ہیں یا ۔۔۔۔۔۔؟؟؟

ز ۔ م
1 دسمبر 2018ء