…ولی بننے کی خــــواہش پال تو رکھی ہے اس دل میں

Shaista Mufti_Pakistan
==========
اڑانیں لاکھ بھر لے قیــــــــــد میں وہ آ ہی جــــاتا ہے
ہے قیــــدی دام میں صیــــــاد کے پکڑا ہی جـــاتا ہے

تجھے پانے کی دل میں جستجو کچھ اس طرح مہکے
بھٹــــــــکتا ہے مســــافر راستے پر آ ہی جـــــــاتا ہے

بہت سے اجنبــی چہروں میں خود کو اجنبــی دیکھوں
یہی اک خـــواب مجھ کو رات کو دہلا ہی جـــــاتا ہے

درونِ ذات کی تنہائیــــــــــــاں یوں سر پٹـــــــکتی ہیں
ہے سنـــاٹے کی بے کل گونج کہ پتھرا ہی جـــاتا ہے

ولی بننے کی خــــواہش پال تو رکھی ہے اس دل میں
ہے اک وحشــــــی صفت انسان کہ بہــکا ہی جاتا ہے

نہ جــــانے کس لئے بے نور آنکھیں راستـــہ دیکھیں
کوئی تو راز ہے ســـارے جہــاں میں پا ہی جـاتا ہے

شائستہ مفتى