مولانا عبد المعید مدنی صاحب ایک رافضی کی پناہ میں

Mutiur Rahman Aziz
مولانا عبد المعید مدنی صاحب ایک رافضی کی پناہ میں
کوئی موقر عہدے پر فائز شخص اس حد تک اپنی ذاتی دشمنی اور مطالبے کے مکمل نہ ہونے کی شکل میں اتنی سطح کی گہرائی کی تاریکی میں چلا جائے گا۔ شاید ایسی مثال کم از کم اہل توحید نے تو نہیں دیکھا ہوگا۔ کہ اپنے جائز نا جائز مطالبات حالات کے اختلاف کی وجہ سے پورا نہ ہونے کی صورت میں تمام امہ کو ٹھوکر میں رکھ کر ایک رافضی سے مل کر اپنی ہی ایک موحدہ بہن سے دشمنی نکالنے پرروافض اور مکار شیعہ لابی کے شانہ بشانہ چل نکلیں گے ۔ جی ہاں ۔ جناب مولانا عبد المعید صاحب اپنی ذہنیت کے الگ الگ اتار چڑھاﺅ ، جس میں ان کی جمعیت اور سلف اور علماءدشمنی تو تھی ہی ۔اب اس میں رافضیوں کے ساتھ مل کر اہل توحید کے خلاف سازشیں رچنے کیلئے مستعد نظر آ رہے ہیں۔ کم از کم جماعت کے لوگوں نے ایسا تصور تو کبھی نہیں کیا ہوگا۔ چہ جائے کہ جناب مولانا عبد المعید صاحب مدنی خوارج اور رافضیوں پر پوری سیریز تیار کرچکے ہیں ، اور آج انہیں خوارج کے اشارے پران کے ساتھ چل نکلے ہیں۔
معاملہ کچھ اس طرح ہے کہ کچھ سالوں قبل جناب عبد المعید صاحب نے ڈاکٹر نوہیرا شیخ صاحبہ سے امداد کی اپیل کی تھی۔ حالات کے موافق نہ ہونے کے سبب ڈاکٹر نوہیرا شیخ تک وہ بات نہیں پہنچ سکی۔ جس پر جناب عبد المعید صاحب مدنی نے اپنی پوری قلمی ، قلبی اور ذہنی فطور کوڈاکٹر نوہیرا شیخ کے خلاف انڈیل ڈالا۔ہوا کیا۔ کچھ نہیں ۔ جو شخص اسلاف ، علماءاور خود اپنی جمعیت کیخلاف اپنی صلاحیت کے رائیگاں کرنے سے گریزاں نہ رہ سکا ۔وہ اپنے جائز نا جائز مطالبے کے عدم تکمیل سے اس قدر بوکھلائے گا کہ روافض ،خوارج ، شیعوںاور ایم آئی ایم کے مسلک دشمن عناصر سے مل کر مولانا عبد المعید صاحب اب ایک عالمہ ڈاکٹر نوہیرا شیخ اور اس کی کمپنی ہیرا گروپ آپ کمپنیز کی بربادی کے خواب سنجونے لگے ہیں۔


جناب عبد المعید صاحب مدنی سے اگر مطالبہ کیا جائے کہ آپ کے ا ن دشمن عناصر سے مل کر ایک موحدہ بہن کو اور مسلم امہ کے پاک اور حلال تجارت اور مسلم معیشت کی بربادی کے خواب دیکھنے میں آپ کا دل تو پرسکون ہو سکتا ہے کہ لیکن حقیقت کو مد نظر رکھتے چلیں کہ آٹھ الگ الگ ریاستوں اور شہروں کی جانچ ایجنسیاں اور پولس نے مہینوں کی جانچ پڑتال اور انکوائری کے بعد ایک روپیہ کا خرد برد ثابت نہیں کر سکیںاور ڈاکٹر صاحبہ کو کلین چٹ کے ساتھ ضمانت دیا۔ مدنی صاحب آپ کن ثبوتوں کے بل بوتے پر ان روافض سے جا ملے جن کی پوری شبیہ اورپوری زندگی بلیک میلنگ اور غنڈہ گردی اور مسلم دشمنی پر منحصر ہے۔ مولاناعبد المعید مدنی اپنی بات چیت کے دوران ایک صحابی کا قول تو نقل کرتے ہوئے دلیل پیش کرتے ہیں لیکن ڈاکٹر نوہیرا شیخ کی حمایت میں کھڑے علماءکو آپ زانی ،فاحش، بدکار اور طرح طرح کے غلط القاب سے کس معیار پر گردانتے ہیں۔ کیا مولانا کسی کے زانی ہونے کے تعلق سے وہ شہادت اور دلیل رکھتے ہیں جو شریعت مطالبہ کرتی ہے۔ کسی عالم کے فاحش اور بدکار ہونے کے تعلق سے آپ کے پاس کوئی ٹھوس ثبوت ہے۔
چلیں آپ کی عادت میں شمار ہے لوگوں پر الزام تراشی اور بہتان تراشی ،بد گوئی ، بدتمیزی اور گالی گلوچ ۔ لیکن ہیرا گروپ آپ کمپنیز جس پر ملک بھر کی مرکزی اور ریاستی جانچ ایجنسیاں ایک بھی غلط پروف لانے میں پورے نو مہینے اور آٹھ سالوں تک ناکام رہیں ۔ اس پر آپ کن ثبوتوں کے تعلق سے الزام تراشی کرتے ہیں۔ دیکھئے مولانا پچھلے سال آپ کی واہیات تحریر پر میں نے بھی جذبات میں آکر آ پ کو تحریر پیش کیا تھا۔ جس کا جواب آج تک آپ سے نہیں بن سکا۔ اگر موجودہ حرکتوں سے آپ کا اظہار ندامت نہ ہوا تو عوام اور مولانا آپ خود ہم سے یہ توقع نہ رکھیں کہ آپ کے تعلق سے حقائق کو شائع نہ کیا جائے گا۔اب چاہے وہ آپ کی شان میں گستاخی ہو یا آپ کی حوصلہ افزائی و عزت افزائی ۔ لہذا پہلی بات تو جس رافضی کیلئے آپ نے اپنی آڈیو ریلیز کرکے یوٹیوب چینل پر نشر کرایا ہے۔ اس کو حذف کرائیں۔ اور دوسری بات جس عالمہ ڈاکٹر نوہیرا شیخ کے خلاف حکومت ، جوڈیشیل اور انتظامیہ بلیک میلنگ اور مسلم دشمنی کی سطح سے گر کر ظالمانہ رویہ اختیار کر چکی ہے آپ ان کی حمایت سے باز آ جائیں۔ جزاک اللہ۔
مطیع الرحمن عزیز