اردو خبریں بھارت

حافظ وقاری عبداللہ ابن اشفاق احمد منگراواں،اعظم گڑھ کو رشتہ ازدواج میں منسلک ہونے پر نیک خواہشات کا پیغام

✍️صابر اسماعیل احیائی
=========================

شادی کی تقریبات میں ولیمہ ایک ایسا عمل ہے جس کا نبی کریم صل اللہ علیہ وسلم نے حکم دیا ہے۔ولیمہ حضورصلی اللہ علیہ وسلم کی بہت محبوب اورمرغوب سنت ہے اور اس کا سب سے بڑا مقصد اللہ پاک کا شکر ادا کرنا ہے کہ اللہ نے انسان کوایک شریکِ حیات عطا کی جو اس کی زندگی کے لیے تسکینِ خاطر کا باعث ہوگی اور زندگی کے نشیب و فراز میں اس کی مونس وہمدرد بھی ۔ اللہ کا شکر ادا کرنے کا ایک طریقہ یہ بتایا گیا کہ اس خوشی میں دعوت کا اہتمام کیا جائےاوراپنے دوستوں ،رشتے داروں نیز غرباء کوبھی اپنی اس خوشی میں شریک کیاجائے چنانچہ ولیمہ اسی خوشی کا اظہار ہےمگریادرکھناچاہیے کہ ولیمہ اپنی استطاعت بھرصرف خوشی کااظہارہو،دولت ،تعلقات ، عزت اوراپنی سماجی اہمیت کامظاہرہ نہ ہو۔
خالد بن ولید پبلک اسکول محمد پور اعظم گڑھ کے مایہ ناز استاد حافظ وقاری عبداللہ صاحب کل یعنی 26 مارچ 2021 بروز جمعہ کو رشتہ ازدواج سے منسلک ہو گئے، ان کا نکاح موضع آنوک کے حافظ عبد العلیم صاحب کی صاحبزادی سے ہوا،دعوت ولیمہ کا پروگرام آج منگراواں میں منعقد ہوا ،اس میں عزیز و اقارب، دوست و احباب، رشتے دار،علاقے کے عمائدین کے علاوہ خالدبن ولید پبلک اسکول کے جملہ اساتذہ کرام شر یک ہوئے۔اس شادی کی یہ بات خاص طور پر قابل ذکر ہے کہ اس نکاح و بارات اور ولیمہ کے مواقع پر شرعی حدود و قیود کا خصوصی خیال رکھا گیا تھا۔قاری عبداللہ کی طرف سے اھل خانہ رشتے داروں اور دوست احباب کو خصوصی ہدایت کی گئی تھی کہ خوشی کے اس موقع پر ہم سے کوئی ایسی حرکت نہ ہونے پائے کہ جس پر بعد میں کوئی انگلی اٹھائے،ہماری اس تقریب کو باقی مسلمانوں کے لئے مثال بننا چاہئے۔
نوعروس جوڑے کو نیک خواہشات اور مبارک باد دینے والوں میں پرنسپل ماسٹر عدیل صاحب، آزاد سر، وائس پرنسپل ماسٹر شمس الاسلام صاحب،مولانا زاہد صاحب قاسمی، مولانا طارق صاحب قاسمی ،مولانا ابوذر صاحب قاسمی،حافظ وقاری محمد سلمان صاحب،حافظ وقاری ابوزید صاحب، انوراگ سر،حافظ وقاری سرفراز صاحب،حافظ محمد احمد صاحب،حافظ عبیداللہ صاحب،ایس کے سر اور راقم الحروف کے علاوہ دیگر لوگ شامل ہیں۔

Facebook Comments